ملک میں کورونا سے مزید 6 افراد جاں بحق، 773 نئے کیسز کی تصدیق

وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا ہے کہ پاکستان میں کورونا کی دوسری شدید لہر شروع ہوچکی ہے
وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے صحت فیصل سلطان کا کہنا ہےکہ کورونا سے اموات میں اضافہ ہورہاہے جب کہ کورونا ٹیسٹ مثبت آنے کی شرح ڈھائی سے پونے تین فیصد تک پہنچ چکی ہے۔
ڈاکٹر فیصل سلطان کے مطابق کورونا وباکی دوسری لہر کی وجہ سے پابندیوں کو سخت کرنا ناگزیر ہوتا جارہا ہے،کاروباری سرگرمیوں اور تقریبات کے اوقات کار میں کمی کے لیے مشاورت جاری ہے۔
اُدھر لاہور میں کورونا کیسزبڑھنےکے بعدمیو اسپتال میں معمول کے آپریشن بند کردیے گئے، اسپتال انتظامیہ کی جانب سے نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا گیاہے۔
نہوں نے کہا کہ آئندہ ایک دو دنوں میں تمام صوبوں کی مشاورت کے ساتھ سفارشات سامنے لائیں گے۔ مقامی سطح پر کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پرجرمانے بھی عائد کیے جائیں گے۔ وبا کی دوسری لہر پر قابو پانے کے لیے پابندیاں مزید سخت کرنا پڑیں تو کی جائیں گی اس کے ساتھ عوام کو بھی زیادہ محتاط ہونے کی ضرورت ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ وبا کا پھیلاؤ روکنےکیلئے جتنا احتیاط ضروری ہے اس پر عمل ہوتا نظر نہیں آرہا اس لیے مزید کڑے اقدامات کرنا پڑ سکتے ہیں۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں