حکومت کو اب گھر جانا ہی ہوگا، ،،چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو کے ہنزہ اور دیامیر میں حکومت پر وار

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو کے ہنزہ اور دیامیر میں جلسوں میں خطاب کرتے ہوئے کہناتھا، ،،کسی کو گلگت بلتستان کے عوام کے ووٹوں پر ڈاکا ڈالنے کی اجازت نہیں دیں گے،،گلگت بلتستان سے کہیں نہیں جارہا، اگر گلگت بلتستان سے نکال کر صوبہ بدر کرنا ہے تو مجھے گرفتار کرنا ہوگا
بلاول کاکہنا تھاکہ افسوس کی بات ہےکہ گلگت بلتستان کو پوچھنا پڑ رہاہےکہ سی پیک کہاں ہے؟ ہم نےگلگت بلتستان کے عوام کو آئینی صوبہ دینا ہے، سی پیک سمیت تمام منصوبوں میں یہاں کے عوام کو روزگار دیں گے
اس سے قبل دیامر کے علاقے تھور میں بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ گلگت کے عوام نے ثابت کردیا کہ حکومت کو اب گھر جانا ہی ہوگا، حکومت کی کوشش ہے کہ مجھے صوبہ بدر کردیا جائے تاکہ آسانی سے دھاندلی کی جاسکے، اپوزیشن جماعتوں کو گلگت بلتستان کے انتخابی عمل سے باہر کرنے کی کوشش دھاندلی ہوگی، ہم کسی کو گلگت بلتستان کے عوام کے ووٹوں پر ڈاکا ڈالنے کی اجازت نہیں دیں گے۔ ن کاکہنا تھاکہ یہاں سے ہمارا تین نسلوں کا رشتہ ہے، پاکستان پیپلز پارٹی اپنی تاریخ دہراتے ہوئے گلگت بلتستان کی عوام کو حق حاکمیت، حق ملکیت اور حق روزگار دلوائے گی۔
چیئرمین پیپلزپارٹی کا کہنا تھا کہ آج بزرگ پینشن کے لیے پریشان ہیں تو ڈاکٹر اور نرس بھی سراپا احتجاج ہیں، مزدور بھی احتجاج کررہا ہے تو تاجر بھی ناخوش ہے اور کسانوں کے احتجاج پر لاٹھی چارج کر کے انہیں شہید کیا جارہا ہے، ہم نے گلگت بلتستان کے عوام کو اس ظالم و نااہل کٹھ پتلی راج سے بچانا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں